منگل, اپریل 23, 2024
صفحہ اولتازہ ترینذاتی اور پیشہ ورانہ زندگی کو تباہ کر دیتا ہے، میجر جنرل...

ذاتی اور پیشہ ورانہ زندگی کو تباہ کر دیتا ہے، میجر جنرل محمد انیق الرحمن

سندھ مدرستہ الاسلام یونیورسٹی اور اینٹی نارکوٹکس فورس کی جانب سے بدھ کے روز جامعہ کے طلباء کے لیے "کراچی کے تعلیمی اداروں میں منشیات کے استعمال کے خلاف مہم” کے موضوع پر گیسٹ لیکچر کا اہتمام کیا گیا۔

 

تقریب کے مہمان خصوصی میجر جنرل محمد انیق الرحمان ملک ڈائریکٹر جنرل اینٹی نارکوٹکس فورس تھے۔ ان کے ہمراہ بریگیڈیئر وقار حیدر رضوی، فورس کمانڈر اے این ایف اور کرنل انوار حسین ڈائریکٹر آفیسرز ٹریننگ اسکول اے این ایف بھی تھے۔

 

ایس ایم آئی یو کے طلباء سے خطاب کرتے ہوئے میجر جنرل محمد انیق الرحمان ملک نے کہا کہ نوجوانوں کو منشیات سے دور رہنا چاہیے جو کہ ایک ایسا نشہ ہے جو کسی کی ذاتی اور پیشہ ورانہ زندگی کو تباہ کر دیتا ہے۔

مزید پڑھیں:دورانِ امتحان شدید گرمی کے سبب انتقال کرنے والے طالب علم کی موت کا ذمہ دار کون ؟ سپلا

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ طلباء کے لیے منشیات سے متعلق آگاہی کے موضوعات کو اسکول، کالج اور یونیورسٹی کی سطح پر نصاب میں شامل کیا جانا چاہیے۔

 

میجر جنرل محمد انیق الرحمان ملک نے طلباء کو بھی مشورہ دیا کہ وہ کسی یونیورسٹی میں داخل ہوتے وقت اپنے دوستوں اور حلقوں کا انتخاب بہت سمجھداری اور احتیاط سے کریں کیونکہ اس عمر میں نوجوان دوستوں کے ذریعے منشیات کی طرف مائل ہو جاتے ہیں۔

 

انہوں نے منشیات کی اقسام، انسان کے دماغ اور جسم پر ان کے اثرات اور اس لعنت کو روکنے کے لیے احتیاطی تدابیر پر بھی بات کی۔

مزید پڑھیں:پروفیسر ڈاکٹر عمران احمد جامعہ کراچی کے قائم مقام رجسٹرار مقرر

سندھ مدرستہ الاسلام یونیورسٹی کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ یہاں بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناح کی مادر علمی میں آکر اپنے لیے اعزاز محسوس کرتے ہیں۔

 

میجر جنرل محمد انیق الرحمان ملک نے کہا کہ مجھے ایس ایم آئی یو سے بہت زیادہ توقعات ہیں کہ وہ اپنی ماضی کی روایت کے مطابق مزید رہنما پیدا کرے گا۔ جیسا کہ اس ادارے نے بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح جیسے رہنما پیدا کیے تھے۔

 

ڈاکٹر مجیب صحرائی، وائس چانسلر ایس ایم آئی یو نے کہا کہ اے این ایف حکام نے کراچی شہر کی یونیورسٹیوں میں طلباء کی جانب سے منشیات کے استعمال کے بارے میں اپنے اہم خیالات کا اظہار کیا ہے، اس لیے طلباء کو اس بارے میں ہوشیار رہنا چاہیے۔

 

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس ملک میں توانائی کے بہت سے شعبے ہیں لیکن سب سے اہم بات یہ ہے کہ گزشتہ ایک دہائی سے پاکستان میں نوجوانوں کی بڑی توانائی موجود ہے جو کہ ملک کی کل آبادی کا 65 فیصد ہے۔

مزید پڑھیں:سندھ زرعی یونیورسٹی، انفارمیشن ٹیکنالوجی سینٹر کی زیر میزبانی IEEE کی 3 سوسائٹیز کا افتتاح

اس لیے ہمیں اس توانائی کا خیال رکھنا چاہیے اور ان کو ترقی کے لیے استعمال کرنا چاہیے۔ پاکستان انہوں نے والدین اور اساتذہ پر زور دیا کہ وہ اے این ایف کی طرح اپنے بچوں پر نظر رکھیں کیونکہ وہ منشیات کے استعمال سے دور رہ سکتے ہیں۔

 

اس موقع پر میجر جنرل محمد انیق الرحمان ملک اور وائس چانسلر ایس ایم آئی یو ڈاکٹر مجیب صحرائی نے اے این ایف کے سفیر بننے والے طلباء وطالبات میں بیجز تقسیم کیے۔ قبل ازیں ڈائریکٹر ڈائریکٹوریٹ آف اسٹوڈنٹس افیئرز اینڈ کونسلنگ ڈاکٹر آصف علی وگن نے بھی خطبہ استقبالیہ پیش کیا۔

 

اس سے قبل معزز مہمانان نے جناح میوزیم کا دورہ بھی کیا۔ جہاں انہوں نے قائداعظم محمد علی جناح اور ایس ایم آئی یو کے دیگر سابق طلباء سے متعلق ریکارڈ میں گہری دلچسپی لی۔

 

لیکچر پروگرام میں جامعہ کے ڈینز، چیئرپرسنز، فیکلٹی اور اسٹاف ممبران، رجسٹرار، پرنسپل افسران اور طلباء نے شرکت کی۔

News Desk
News Deskhttps://educationnews.tv/
ایجوکیشن نیوز تعلیمی خبروں ، تعلیمی اداروں کی اپ ڈیٹس اور تحقیقاتی رپورٹس کی پہلی ویب سائٹ ہے ۔
متعلقہ خبریں

تبصرہ کریں

مقبول ترین